سوره قمر/ آیه 4- 8

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 23

٤۔وَ لَقَدْ جاء َہُمْ مِنَ الْأَنْباء ِ ما فیہِ مُزْدَجَر۔
٥۔ حِکْمَة بالِغَة فَما تُغْنِ النُّذُرُ۔
٦۔فَتَوَلَّ عَنْہُمْ یَوْمَ یَدْعُ الدَّاعِ ِلی شَیْء ٍ نُکُرٍ۔
٧۔خُشَّعاً أَبْصارُہُمْ یَخْرُجُونَ مِنَ الْأَجْداثِ کَأَنَّہُمْ جَراد مُنْتَشِر۔
٨۔ مُہْطِعینَ ِلَی الدَّاعِ یَقُولُ الْکافِرُونَ ہذا یَوْم عَسِر۔

ترجمہ

٤۔ بُرائیوں سے عبرت حاصل کرنے کے لیے کافی خبر یں ان تک پہنچی ہیں ۔
٥۔ یہ آیتیں خُدا کی حکمتِ بالغہ ہیں لیکن ڈرانے والی چیزیں (ہٹ دھرم لوگوں کے لیے ) مفید نہیں ہیں ۔
٦۔ اس بناپر ان سے مُنہ پھیر لے اوراس دن کویاد کرجب خُدا کی طرف بُلانے والا لوگوں کو اعمال کے حساب کے لیے بلائے گا ۔
٧۔ وُہ قبروں سے نکلیں گے اس صُورت میں کہ ان کی آنکھیں وحشت کی وجہ سے جُھکی ہوئی ہوں گی اور وہ منتشر ٹڈی دل کی طرح بلا مقصد ہرطرف دوڑ رہے ہوں گے ۔
٨۔ درآنحالیکہ )(وحشت واضطراب کے زیراثر) اس بلانے والے کی طرف سراُٹھا کردیکھیں گے اورکافر کہیں گے کہ آج سخت اور درد ناک دن ہے ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma