شانِ نزول

سایٹ دفتر حضرت آیة اللہ العظمی ناصر مکارم شیرازی

صفحه کاربران ویژه - خروج
ورود کاربران ورود کاربران

LoginToSite

کلمه امنیتی:

یوزرنام:

پاسورڈ:

LoginComment LoginComment2 LoginComment3 .
ذخیره کریں
 
تفسیر نمونہ جلد 23
مندرجہ بالا آ یت کے لیے بعض مفسرین نے ایک شان ِ نزول بیان کی ہے جس کاخلاصہ کچھ اس طرح ہے ۔منافقین ِ مدینہ کے ایک گروہ عبداللہ بن ابی وغیرہ نے پوشیدہ طورپر کسی کوبنی نظیر کے یہودیوں کے پاس بھیجااورکہا کہ تم آرام سے بیٹھے رہو ۔ اپنے گھروں سے باہر نہ نکلو ۔ اپنے قلعوں کومستحکم کرلو ۔ہمارے پاس دوہزار افراد ہیں جوآخردم تک تمہاری مدد کے لیے تیار ہیں ۔بنی قریظہ اورتمہارے حلیف قبیلہ غطفان کے لوگ بھی تمہاراساتھ دیں گے ۔ یہی وہ محرک تھا جس نے بنی نظیر کے یہودیوں کوپیغمبراسلام (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم) کی مخالفت پرابھارا ۔لیکن اسی دوران بنی نظیر کے ایک سردار ، جس کانام سلام تھا، اس نے حی ابنِ اخطب سے ، جوبنی نظیر کے لائحہ عمل کانگرانِ خاص تھا،کہاتوعبداللہ بن ابی کااعتبار نہ کروہ چاہتاہے کہ تجھے محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)کے خلاف جنگ پراُبھارے اور خُود اپنے گھر میں بیٹھارہے اورتجھے مصیبتوں کے حوالے کردے ۔حیء نے کہا:ہم محمد (صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم)کی دُشمنی اوراس سے جنگ کرنے کے علاوہ اور کسِی چیزکو نہیں جانتے سلام نے اس کے جواب میں کہاکہ خداکی قسم میں دیکھ رہا ہوں کہ ہمیں آخر کار اس سرزمین سے نکلنا پڑے گا اورہمارامال ودولت ، شرف وبزرگی یہ سب برباد ہوں گے ۔ہمارے بچّے قیدی بنائے جائیں گے اورہمارے جوان قتل کردیے جائیں گے (١) ۔
١۔ روح البیان ،جلد ٩ صفحہ ٤٣٩۔یہی معنی کچھ اختلاف کے ساتھ تفسیر درالمنثور ،جلد ٦ صفحہ ١٩٩ میں بھی آیاہے ۔
مندرجہ بالاآ یات اس واقعہ کوبیان کرتی ہیں:
بعض مفسرین کانظر یہ ہے کہ یہ آ یات بنونظیر کے واقعہ سے پہلے نازل ہوئیں اوراس کے بعد کے حوادث کوبیان کرتی ہیں ۔ اوراس وجہ سے انہیں قرآن کے اخبارِغیب میں شمارکرتے ہیں، آ یات کالب ولہجہ جوفعل مضارع کی شکل میں ہے ،اگرچہ اس نظر یہ کی تائید کرتاہے لیکن گزشتہ آیات سے ان آیات کاجوڑیہ بتاتاہے کہ یہ بنونظیر کے واقعہ کے بعد نازل ہوئی ہیں ،کیونکہ گزشتہ آیات بنونظیر کی شکست کے واقعہ اوران کی جلاوطنی کے بعد نازل ہوئی تھیں ۔ فعل مضارع کااستعمال حکایت ِحال کے طورپر ہے ۔(غور فرمایئے ) ۔
12
13
14
15
16
17
18
19
20
Lotus
Mitra
Nazanin
Titr
Tahoma